11

کشمیر پر قبضے کے 71 سال، بھارتی آرمی چیف کی پاکستان کو گیدڑ بھبکی

نئی دہلی: بھارتی آرمی چیف جنرل بپن راوت نے کشمیر پر قبضے کے 71 سال ہونے پر گیدڑ بھبکی دی ہے کہ پاکستان نے دراندازی جاری رکھی تو اس کے خلاف دیگر اقدامات اٹھا سکتے ہیں۔

مقبوضہ کشمیر پر قبضہ کے دوران ہلاک ہونے والے بھارتی فوجیوں کی یاد میں تقریب سے خطاب کرتے ہوئے بھارتی آرمی چیف جنرل بپن راوت نے کہا کہ پاکستان کشمیر میں بنگلا دیش جیسی صورتحال پیدا کررہا ہے اور 71 کی شکست کا بدلہ لینے کیلئے کشمیر میں پراکسی جنگ لڑرہا ہے جس کا مقصد بھارتی فوج کو کشمیر میں الجھا کر رکھنا ہے، لیکن بھارتی ریاست اور فوج اتنی مضبوط ہے کہ کشمیر پر کنٹرول برقرار رکھ سکتی ہے۔

یہ بھی پڑھیں: کشمیر پر بھارتی جارحیت کو 71 برس، کشمیریوں کا یوم سیاہ
جنرل بپن راوت نے بڑھک ماری کہ کوئی بھی ملک کشمیر کو طاقت یا کسی اور طریقے سے بھارت سے نہیں چھین سکتا، اگر پاکستان سرحد پار دراندازی کرتا رہا تو اسے خود نقصان پہنچے گا اور بھارتی فوج اس کے خلاف دیگر اقدامات اٹھاسکتی ہے۔

بھارتی آرمی چیف نے ہرزہ سرائی کرتے ہوئے کہا کہ پاکستان مسلسل جموں کشمیر میں عدم استحکام اور اس پر قبضے کی کوشش کررہا ہے، 71 کی جنگ اور بنگلا دیش بننے کے بعد ان کوششوں میں تیزی آگئی ہے، تاہم وہ ابھی تک کامیاب نہیں ہوسکا۔

بھارتی آرمی چیف نے نہتے کشمیریوں کو دہشت گرد قرار دیتے ہوئے کہا کہ بھارتی افواج پر پتھراؤ کرنے والے کشمیری بھی دہشت گرد ہیں اور ان کے ساتھ سختی سے نمٹنا ہوگا۔

واضح رہے کہ آج دنیا بھر میں کشمیریوں نے جنت نظیر وادی پر بھارتی جارحیت اور قبضے کے 71 ویں سال پر یوم سیاہ منایا۔ 27 اکتوبر1947 کو بھارت نے بین الاقوامی قوانین اور آزادی برصغیر ایکٹ کی خلاف ورزی کرتے ہوئے جموں و کشمیر پر غاصبانہ قبضہ کرلیا تھا۔ تب سے اب تک بھارتی فوج نے لاکھوں کشمیریوں کو شہید کردیا ہے۔

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں